تعلیمی پیکیج بارے فیصلہ پر عمل نہ ہونے پر سپریم کورٹ برہم،توہین عدالت کی کارروائی شروع

مظفرآباد(وقائع نگار) تعلیمی پیکیج کے سلسلہ میں سپریم کو رٹ آف آزاد کشمیر کی طرف سے دی جانے والی ہدیات پر عمل درآمد نہ کرنے پر عدالت عظمی ٰ کا سخت اظہار برمی توہین عدالت کی کاروائی کا آغاز کردیا ۔گزشتہ روز تعلیمی پیکیج پر سماعت کے دوران پی پی پی آزاد کشمیر کے صدر چوہدری لطیف اکبر سابق وزراء کرام محمد مطلوب انقلابی ،میاں عبدالوحید،راجہ فیصل ممتازراٹھور ممبر کشمیر کونسل اختر پرویز اعوان مرکزی سیکرٹری ریکارڈ شوکت جاوید میر ،سید مجاز شاہ ،مبشر منیر اعوان،عارف مغل،ٹھیکدار الیاس اعوان،راجہ بشارت خواجہ عبدالعزیز شبیر اعوان پی ایس ایف کے ماجد اعوان یوتھ کے راشد مغل چوہدری افسر سجاد،شہزاد رشید سمیت بڑی تعداد میں عہدیدار کارکن اس موقع پر موجود تھے بعد ازاں میڈیا سے گفتگو کرتے ہو ئے پی پی پی کے صدر چوہدری لطیف اکبر مطلوب انقلابی میاں عبدالوحید ،راجہ فیصل راٹھور نے کہا کہ تعلیمی پیکج سیاسی جنگ نہیں بلکہ آنے والی نسلوں کے روشن مستقبل کی ضمانت ہیں پیپلز پارٹی نے ہمیشہ عوامی حقوق کی ترجمانی کی ہے اور مطلوب انقلابی نے کہاکہ ہم نے جہاں تعلیمی ادارے دیئے وہاں سے ہمیں دس ووٹ بھی نہیں ملے اس مقصد پر نہیں کے ہم اصولوں کو چھوڑ دیں ۔