برطانیہ اور یورپ کے کشمیری تارکین وطن22 مارچ کو جنیوا مظاہرے میں شریک ہوں،بیرسٹر سلطان

اسلام آباد(سٹاف رپورٹر) آزاد کشمیر کے سابق وزیراعظم و پی ٹی آئی کشمیر کے صدر بیرسٹر سلطان محمودچوہدری نے 22 مارچ کو جنیوا(سوئٹزرلینڈ) میں اقوام متحدہ کے کمشن برائے انسانی حقوق کے سامنے مظاہرے کا اعلان کر دیا ہے اوراس سلسلے میں برطانیہ اور یورپ کے کشمیریوں سے اپیل کی ہے کہ وہ اس مظاہرے میں بھرپور انداز میں شرکت کریں۔ بلکہ جو لوگ بھی حق خود ارادیت اور انسانی حقوق پر یقین رکھتے ہیں وہ ہمارے ساتھ ملکر مقبوضہ کشمیر میں جاری انسانی حقوق کی پامالی پر آواز اٹھائیں اور سئیز فائر لائن پر بھارت کی بڑھتی ہوئے خلاف ورزیوں کے خلاف آواز بلند کریں۔ اسی طرح سئیز فائر لائن کے متاثرین کی داد رسی کے لئے ہم نے اسلام آباد میں بھی مظاہرہ کیا تھا اور اب بھی جنیوا میں مظاہرہ کرکے مقبوضہ کشمیر کے عوام کے ساتھ یکجہتی کے ساتھ ساتھ سیئز فائر لائن کے متاثرین کے مسائل کے حل پر بھی زور دیا جائے گا۔ بھارت کے جارحانہ عزائم کی وجہ سے اس ریجن میں صورتحال خاصی کشیدہ ہو تی جا رہی ہے۔جنیوا میں مظاہرے سے قبل میں برسلز میں یورپی پارلیمنٹ  میں بھی ڈیڑھ کرور کشمیری عوما کو موقف پیش کرونگا۔ ان خیالات کا اظہار انھوں نے آج یہاں اسلام آباد میں پی ٹی آئی کشمیر کے مرکزی سیکریٹیریٹ میں اخبار نویسوں سے بات چیت کرتے ہوئے کیا۔بیرسٹر سلطان محمود چوہدری نے برطانیہ، یورپ اور بالخصوص جینوا کے قریب مقیم لوگوں سے کہا ہے کہ وہ 22ارچ کو اس مظاہرے میں بھرپور شرکت کرکے مقبوضہ کشمیر کے حریت پسندوں سے یکجہتی کا اظہار کریں۔